بلغ العُلےٰ بكمالہٖ، كشف الدُّجٰے بِجَمالِہٖ، حَسنت جمیعُ خصَالہٖ، صَلُّوا عَلیْہ وَ آلہٖ



اَلّٰھُمَ صَلِّ عَليٰ مُحَمَّدٍوَّ علي آل محمد وبارڪ وسلم


حضرت جبریل علیہ السلام كیسے اور كیوں پیدا ہوئے

حضرت جبریل علیہ السلام كی ایك ہزار زبانیں اور چھہ سؤ پَر ہیں، سر سے پاؤں تك زعفران جیسے بال ہیں ان كی دونوں آنكھوں كے درمیان آفتاب ہے ہر بال پر ایك ستارہ مثل ماہتاب درخشان ہے۔ ہر روز تین سو ساٹھ بار دریائے نور میں غوطہ لگاتے ہیں، جب دریائے نور سے غوطہ لگاكر نكلتے ہیں تو ہر پر سے قطرے ٹپكتے ہیں، ہر قطرے سے اﷲ تعالیٰ ایك فرشتہ پیدا كرتا ہے جو قیامت كر اﷲ تعالیٰ كی تسبیح كرتا رہے گا۔

ایك روز حضرت جبریل علیہ السلام نے حضور سرور كائنات صلی اﷲ علیہ وآلہ وسلم كی خدمت میں حاضر ہو كر عرض كیا كہ اﷲ تعالیٰ نے جب مجھے پیدا كیا تو دس ہزار سال تك یہ پتہ نہ چل سكتا میں كس مقصد كیلئے پیدا كیا گیا ہوں اور میں كیا كروں۔ دس ہزار سال بعد ندا آئی كہ، اے جبریل! جب مجھے معلوم ہوا كہ میرا نام جبریل ہے اور میں نے فوراً جواب میں عرض كیا، لَبَّیْكَ اَلّٰلھُمَّ لَبَّیْكَ اﷲ تعالیٰ نے حكم فرمایا كہ میری تقیدیس بیان كر۔ میں نے دس ہزار سال تك حكم بجا لایا، پھر حكم ہوا كہ میری بزرگی بیان كرو، پھر میں نے دس ہزار سال تك بزرگی بیان كرتا رہا، اس كے بعد مجھہ پر انوار عرش ظاہر ہوئے، عرش پر، لَااِلٰہَ اِلَّااﷲُ مُحَمَّدٌرَّسُوْلُ اﷲِ لكھا ہوا دیكھا۔ میں نے دریافت كیا، اے باری تعالیٰ محمد صلی اﷲ علیہ وآلہ وسلم كون ہیں؟ ارشاد ہوا، اے جبریل اگر محمد صلی اﷲ علیہ وآلہ وسلم نہ ہوتے تو میں تجھہ كو پیدا نہ كرتا، بلكہ نہ جنّت پیدا كرتا نہ دوزخ، نہ چاند، نہ سورج۔ اے جبریل!محمد ﷺ پر درود پڑھو، چنانچہ میں نے دس ہزار برس تك حضور پُر نور صلی اﷲ علیہ و آلہ وسلم پر درود پڑھتا رہا۔ (اب راز ظاہر ہوا كہ حضرت جبریل علیہ السلام كس كام كے لئے پیدا كئے گئے تھے)

درود خاص

ایك دن حضور پاك ﷺ مدینہ كی مسجد میں بیٹھے تھے كہ جبریل امین آئے كہا یا رسول ﷲ ﷺ خدا تعالیٰ نے آپ كو سلام كہتا ہے اور بعد سلام كے تحفہ بھیجتا ہے اور كہتا ہے كہ یہ دُعا تمہاری اُمَّت كیے واسطے بھیجی ہے مگر تمہاری اُمَّت كی بخشش كا سبب كیّا ہے۔ اگر آدمی نے تمام عمر سجدہ كیا ہے۔ اس دُعا كو پڑھے تو اسےہزار شہیدوں اور صدیقوں كا اور لوح قلم اور عرش اور كرسی طبق آسمان اور زمین كو اور آٹھوں جنتوں كا ملے اور جو كوئی تمام عمر میں ایك مرتبہ پرھے یا نظر سے دیكھ یا سُنے تو ثواب نوح نجی اﷲ كا اور ابراھیم كا اور یعقوب كا اور موسیٰ اور عیسیٰ علی السلام علیھم كا دے گا اور ثواب بہتر جبرئیل اور بہتر میكائیل اور اسرافیل كا اور عزرائیل كا دے گا اور ثواب یوسف علیہ السلام كا دیے گا یا محمد ﷺ اس كے ماں باپ كو بخشوں گا اور یا محمد ﷺ، جس گھر میں یہ دعا ہوگی تو ہزار گھر تك بركت ہوگی آگ سے اور بلاؤں سے امن میں رہے گا اور اس دُعا كو پڑھنے والا جنت الفردوس میں ہمسایہ حضور نبی كریم صلی اﷲ علیہ وآلہ وسلم كا ہوگا اور اسكے واسطے جنت میں محل تیار ہوتے ہیں اور ایسے محل كہ اس میں اسی ہزار ندی